میرا تعلق ایک غریب گھرانے سے ہے

یرا تعلق ایک غریب گھرانے سے ہے مجھے پڑھنے لکھنے کا شوق تھا لیکن گھر کے حالات کی وجہ سے میں پڑھنا پائیں س وقت میری عمر ستارہ سال تھی میری جلد کا رنگ سفید دودھ کی مانند گورا تھا مجھے جو بھی دیکھتا مجھ پر مر جاتا مجھے بھی شروع سے تین چار لڑکوں کے ساتھ افیئر رکھنے کی عادت پڑ گئی تھی ۔

اس وقت میری عمر 17 سال تین ماہ تھی جب میں نے اپنے کزن کو پہلی بار دیکھا میں نہا کر باہر نکلی وہ سامنے ہی کھڑا تھا میں تو لیا اوڑھ کر واش روم سے باہر نکلی تھی میرا کزن مجھے دیکھ کر پہلے تو گھبرا گیا بعد میں جب میں بھی اس کی اور بڑی تو اسے ایک دم پوچھا کیا لینے آۓ ہو میرے کمرے میں اس نے ایک دم سے گھبرا کر کہا میں آپی کے لیے بک لینے آیا ہوں ۔میرا ایک دم سے تعاون نچے گر گیا میں خلافٹ میں نے اسے جلدی جلدی نیچے بیٹھ کر اوپر کیا لیکن کیا فائدہ میرے کزن نے مجھے سب کچھ دیکھ لیا تھا

میری نیچے بہت ہی بال تھے میرا کزن | دیکھ کر چونک گیا ۔ میں نے اسے اندر بلایا میں نے اس سے پوچھا تمہارے بھی اس جگہ پر ہال ہے وہ شرمانے لگ پڑا میں نے خود سے اس کے اتار کر چکی اس پر بھی بال تھے وہ شرمانے لگے بعد میں اس نے مجھے بیڈ پر دھکا دیامیں نے اس کو باہوں میں لے لیا ملکی ہلکی طرح سے اس کو مسل رہی تھی

ایسے مسئلہ رہی تھی کہ جیسے یہ کوئی دو سال کا بچا ہو ایک دم سے اس نے اپنا سیدھا کیا اور مجھ میں دکھیل ایا جٹ کا مارا کہ خون نکلنے لگے بڑا سے میری ایک دم سے ﷺ نکل گئی میں اس کو ملتی ہوں واش روم میں واپس چلی گئی شاید میری سیل ٹوٹی تھیمیں اپنی دو کرو واش روم سے باہر لے میں نے اس کو گھر واپس جانے کے لیے کہہ دیا ابھی اس کا کام بھی مکمل نہیں ہوا تھا اس نے مجھ کو پھر سے پڑنا چاہا لیکن میں نے اس کو کہا چلے جاؤ یہاں سے میں اپنی امی کو بلا لوں گا یہ ڈرتا ہوں اپنے گھر واپس چلا گیا گ

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *