فوری انڈ ے جیسے ہوجائیں گے

جسم کے ہر حصے کی جلد دوسرے سے مختلف ہوتی ہے ۔ آپ کے چہرے کی جلد ایک ایسے گلینڈ یا غدودسے بنتی ہے جوجلد کوچکنا رکھنے کے لیے دہنی مادہ یا روغن پیدا کرتاہے ۔ یہ غدود چربی پیداکرنے والا مادہ سیبم اپنے ا ندر جذب کرتے ہیں جوکہ جلد کی سطح سے پوروں کے ذریعے باہر نکل آتا ہے ۔ اس طویل عمل کا مقصد یہ ہے

کہ آپ کی جلد قدرتی طور پر ملائم، صاف اور نم رہے ۔مشکل تب پیش آتی ہے جب اس عمل میں کوئی بیرونی یا اندرونی مداخلت پیدا ہو جائے ۔ جسم میں ہارمونز کے تناسب میں کمی یا زیادتی چہرے پر ہونے والے کیل مہاسوں کی ایک اہم وجہ ہے ۔ اس کی وجہ سے اکثر جلد کے غدود زیادہ سیبم پیدا کرنے لگتے ہیں ۔ اس سے غدود بندہونے لگتے ہیں اور اس میں جراثیم جمع ہو کر کیل مہاسوں کا سبب بن جاتے ہیں ۔ یہ جراثیم میک اپ یا مردہ جلد کیے وجہ سے بھی بننے لگتے ہیں ۔ اس مسئلے کی وجہ سے نہ صرف کیل مہاسے بلکے بلیک ہیڈز اور وائٹ ہیڈز بھی چہرے پر ہونے لگ جاتے ہیں ۔آج جو ریمڈی بتائیں گے اس کے استعمال سے اپنے جلد کے کالے حصوں کو ان کو بہت آسانی کیساتھ ساتھ بیس منٹ کے اندر بہت زیادہ چمکا سکتے ہیں
بلکل انڈے کی طرح چمک جائیں گے ۔کالی جگہ پر لگانے سے وہ حصہ بہت سفید اور جاذب نظر ہوجائے گا ۔ اس کو بنانے کیلئے ایک باؤل میں ایک

چمچ گلیسرین استعمال کرنا ہے اور دوسرے نمبر پر اس میں ایک چمچ نمک استعمال کرنا ہے ۔اگر آپ نمک کا استعمال نہیں کرنا چاہتے تو آپ چینی کو اچھے سے گرینڈ کرکے اس کا پاؤڈر بھی استعمال کرسکتے ہیں۔ دونوں کو اچھے طریقہ سے مکس کرنے کے بعد سستا طاقتور سکرب بن کر تیار ہوجائیگا ۔ اگر آپ کے ہاتھوں کے جوڑ جو کالے ہیں تو اس سکرب کو اس جگہ پر لگائیں اور پانچ منٹ کیلئے اچھے سے مساج کرنا ہے ۔ آ پ نے ہلکے ہاتھوں پر ہی مساج کرنا ہے آپ نے گھٹنوں ، ٹخنوں اور گردن پر استعمال کرسکتے ہیں ۔ پانچ منٹ تک مساج کرنے کے بعد جلد کے ان حصوں کو صاف کرلیں ۔ آپ نے ایک باؤل میں ایک چمچ بیسن استعمال کرنا ہے اس کے بعد ایک چمچ دودھ کی ملائی استعمال کرنی ہے اور تیسرے نمبر سفید سرکہ استعمال کرنا ہے ۔اگر آپ نے پاؤں پر لگانا ہے ۔ بیس منٹ تک اس کو لگا کر رکھنا ہے جب یہ خشک ہوجائے تو ہلکے ہاتھوں سے اس کو صاف کر کے ٹھنڈے پانی سے دھو دیں تو ایک ہی دفعہ کے استعمال سے آپ کو بہت اچھے رزلٹ ملیں اور آپ کی جلد مکمل صاف شفاف اور چمکدار ہوجائیگی ۔ اس کا کوئی سائیڈ ایفیکیٹ نہیں ہے مرد وخواتین دونوں ہی استعمال کرسکتے ہیں۔

Categories

Comments are closed.