شام کی چائے اس طرح بناؤ اور سدا بہار جوانی پاؤ

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ ! اس تحریر میں ایک ایسی دودھ پتی چائے کی ریسیپی بتارہے ہیں جس کے صرف ایک کپ سے ہی آپ کے سارے دن کی تھکن اتر جائے گی یہ ایک اینٹی ایجنگ ٹی بھی ہے جس کے استعمال سے آپ جوان بھی رہیں گے بڑھاپا دیر سے آئے گا دماغ اور نظر بھی تیز ہوگی اور آپ کی قوت مدافعت بھی بڑھے گی آپ گھر میں روزانہ چائے تو پیتے ہیں ہوں گے تو بس آج سے آپ نے یہ والی چائے پینا شروع کردینی ہے آپ کچھ ہی دن میں اپنے اندر حیرت انگیز تبدیلی دیکھیں ہر عمر کے افراد کو یہ فائدہ دے گی ۔سب سے پہلے آپ نے ایک کپ پانی لینا ہے اب پانی کو کسی بھی کپڑے کی مدد سے ڈھک دیں۔

اور کپڑے کو اتنا اندر کردیں کہ یہ پانی میں ڈپ ہوجائے اب اسے کسی ڈوری وغیرہ سے بادندھ لیجئے اب اس میں 2 چمچ چائے کی پتی شامل کیجئے۔اب آپ نے اس میں 2 بادیان کے پھول شامل کرنے ہیں یہ اینٹی ایجنگ خصوصیت سے بھر پور ہوتا ہے ایک سے دو پھول بہت ہیں ۔ اب آپ اس میں الاچی کے بیج شامل کیجئے پانچ سے چھ الائچی کو کھول کر بیج الگ کر دیں اور اس میں ڈال دیں اب اس میں آدھا چمچ پسی ہوئی کالی مرچ ڈال دیجئے۔اب آپ نے اس میں کدوکش کی ہوئی ادرک اس کا آدھا چمچ شامل کیجئے ادرک کی اینٹی ایجنگ خصوصیات آپ کی سکن کے الاسٹن کو ٹوٹنے سے بچاتی ہیں۔

اور آپ کی سکن کو جوان رکھتی ہے ۔ اب کسی دوسرے پین میں پانی ڈال کر اسے دم دینے کے لئے رکھ دیجئے پندرہ منٹ تک دم کیجئے اور پھر اتار لیجئے اور ڈوری کھول کر کپڑانچوڑ لیجئے اب ایک کپ دودھ کسی دوسرے برتن میں ڈالئے اور اسے ایک ابال آنے دیجئے اور پھر اس میں جو قہوہ ہم نے بنایا تھا وہ ڈال دیئے اپنے ذائقے کے حساب سے اس میں چینی شامل کرلیجئے۔اب پانچ منٹ تک اسے پکائیں پھر آنچ بند کردیں اب آپ کی اینٹی ایجنگ ٹی تیار ہے اسے آپ روزانہ پئیں گے تو بڑھاپا دیر سے آئے گا قوت مدافعت بھی بڑھے گی نظر اور دماغ دونوں تیز ہوں گے اور آپ کی ساری تھکن بھی اتر جائے گی ۔

آپ اسے ضرور آزمائیے ۔چائے وہ مشروب ہے، جو دنیا بھر میں کسی نہ کسی شکل میں ضرور استعمال کیا جا رہا ہے۔ چائے کے نقصانات اور فوائد پر عرصہ دراز سے بحث چل رہی ہے، لیکن آج کی جدید میڈیکل سائنس نے یہ ثابت کر دیا ہے کہ سبز چائے کیفین (اعصابی نظام کو تحریک دینے والا جزو) کی موجودگی کے باعث زبردست طبی فوائد کی حامل ہوتی ہے۔ یہاں ہم آپ کو جدید تحقیقات کی روشنی میں چائے کے حیران کن فوائد کے بارے میں آگاہی دیں گے۔امراض قلب: چائے خون کی گردش کو تیز کرکے اس کے جمنے کے امکانات کو معدوم کر دیتی ہے۔ اس کے علاوہ چائے میں فلیوونوائیڈز نامی اینٹی آکسائیڈینٹ بھی ہوتا ہے۔

جو امراض قلب کے خطرات کو کم کر دیتا ہے۔جسمانی آبیدگی: گو کہ بہت زیادہ ورزش اور دفتر میں کام کرنے کے بعد جسمانی آبیدگی کا پانی ہی بہت بڑا ذریعہ ہے لیکن کچھ سائنسدانوں کا خیال ہے جسمانی آبیدگی کے لئے چائے کی اہمیت پانی سے کسی طور پر بھی کم نہیں۔دانتوں کی حفاظت: آپ یقین کریں یا ناں لیکن یہ حقیقت ہے کہ چائے کا باقاعدہ استعمال نہ صرف دانتوں کو مضبوط بناتا ہے بلکہ انہیں خراب ہونے سے بھی بچاتا ہے۔ چائے فلورائیڈ کے حصول کا بہترین ذریعہ ہے، جو دانتوں کی صحت کے لئے نہایت ضروری سمجھا جاتا ہے۔اللہ ہم سب کا حامی و ناصر ہو۔آمین

Categories

Comments are closed.