”روزانہ صرف ایک لونگ اس طرح کھالیں ایسا فائدہ ساری زندگی دعائیں دوگے“

ہمار ے مصالحوں میں لونگ بہت زیادہ استعمال ہوتی ہے

اسے پان میں بھی ڈالتے اور مختلف قسم کی میٹھی اور نمکین ڈشز کی زینت بھی بنتی ہے اسے ادویاتی طور پر جوشاند ہ اور سفوف بنا کر استعمال کیا جاتا ہے اس کے علاوہ اس کا تیل بھی نکالتے ہیں جو دانتوں اور مسوڑوں کے درد میں کام آتا ہے ۔ کیونکہ یہ وقتی طور پر سن کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے ۔ ایک طبی تحقیق کے مطابق لونگ میں کاربو ہائیڈریٹ رطوبت پروٹین چکنائی خام ریشہ اور معدنی مادے ہوتے ہیں۔ لونگ میں بہت سی طبی خوبیاں موجود ہیں ۔معدے سے ریا کو خارج کرنے میں مدد دیتی ہے ۔ اسی طرح لونگ میں ایسے اجزاء پائے جاتےہیں جو خ و ن کی گردش کو مستحکم کرتے ہیں ۔ جسم کا درجہ حرارت برقرار رکھتے ہیں ۔ لونگ کا تیل بیرونی مالش کے ذریعے جلد کو نئی زندگی دیتا ہے ۔ اس کی مالش سے حدت اور سرخی پیدا ہوتی ہے ۔ قبض کشااورجلاب آور ادویات میں اسے ملا کر استعمال کرنے سے دیگر جولاب آور ادویات کی طرح پیٹ درد نہیں ہوتا۔ لونگ سے نکلنے والا تیل بھی لونگ جیسے اوصاف رکھتا ہے ۔ تین سے پانچ بوند تک کھانے سے پیٹ درد اپھارہ بدہضمی اور قے وغیرہ کو دور کرتا ہے ۔ انڈونیشیا سے لیکر پاکستان تک لونگ کو کئی ادویات اور کھانوں میں مہک اور ذائقے کیلئے استعمال کیا جاتا ہے ۔ ماہرین نے اس چھوٹی سی شے کے کئی اہم خواص دریافت کیے ہیں۔ جو انسانوں میں شفاء کی وجہ بن سکتے ہیں۔ کئی ممالک میں لونگ کو کئی امراض کے علاج میں استعمال کیا جارہا ہے ۔ماہرین تحقیق کے بعد لونگ کے جو باکمال طبی فوائد اخذ کیے ہیں ا ن میں سے کچھ فوائد بتاتے ہیں تاکہ اس سے بھرپور فائدہ اٹھا سکیں۔ معدہ کیلئے مفید ہے لونگ الزائمر کا بہاؤ تیز کرتی ہے نظام ہضم بہتر ہوجاتا ہے۔لونگ کا ایک دانہ چٹکی بھر نمک کیساتھ چبایا جائے تو بلغم کے اخراج میں آسانی ہوجاتی ہے ۔ گلے کی خراش کم ہوجاتی ہے او رکھانسی رک جاتی ہے ۔حلق کی سوزش ختم ہوجاتی ہے ۔ حلق کی سوزش اور بلغم کے اجتماع سے پیدا ہونے والی کھانسی کے علاج کیلئے جلا ہوا لونگ چبانا بھی اکسیر ہے ۔ چھ عدد لونگ تیس ملی لیٹر پانی میں ڈال کر ابالنے سے جوشاندہ تیار ہوجائیگا اس میں ایک چمچ شہد ڈال دیں اور چائے کا ایک چمچہ جوشاند ہ روزانہ تین بار پینے سے بلغم کا اخراج تیز ہوجاتا ہے اور دمہ سے آفاقہ ہوتا ہے ۔ لونگ کا استعمال شوگر کیلئے بہت مفید ہے ۔ لونگ میں موجود مفید اجزاء پورے جسم اور خصوصی جگر پر چربی بننے کے عمل کو کم کرتے ہیں ۔ چوہوں پر کیے گئے تجربات سے انکشاف ہوا ہے کہ لونگ حاصل شدہ بعض کیمیکل موٹاپے کو روکتے ہیں اور پورے بدن کو چربی کو ذائل کرتے ہیں۔ لونگ سونٹھ ،جائفل اور حرمل کو تلوں کے تیل میں پکا کر ملنا جوڑو ں کے دردوں کیلئے بہت مفید ہے ان کے علاوہ لونگ کا استعمال کھانوں اور پکوانوں میں بہت عام ہے ۔ اسے پان سپاری میں بھی استعمال کیا جاتا ہے ۔ بخار کے بعد لونگ کا سفوف دہی میں ملا کر مریض کو کھلانے سے بھوک بڑھ جاتی ہے اور مریض کی کمزوری جلد دور ہوجاتی ہے ۔

Categories

Comments are closed.