تین عجیب و غریب سوال ایک روی وزیر بغداد آیا ، اور تین سوال پوچھے

غداد میں ایک رومی آیا اور اس نے خلیفہ سے آکر عرض کیا میرے یہ تین سوال ہیں ، اگر آپ کی سلطنت میں کوئی موجود ہو تو بتلاۓ ! خلیفہ نے اعلان کر دیا سب علماء جمع ہوۓ ، امام اعظم بھی تشریف لاۓ ۔ رومی ممبر پر چڑھا اور اس نے سوال کیا ( ۱ ) بتاؤ خدا سے پہلے کون تھا ؟

( ۲ ) یہ بتاؤ خدا کا رخ کدھر ہے ؟ ( ۳ ) اور خدا اس وقت کیا کر رہا ہے ؟ یہ سن کر سب خاموش ہو گئے کسی کو جواب نہ آرہا تھا ۔ امام اعظم ابو حنیفہ رحمتہ اللہ علیہ آگے بڑھے ، اور کہا میں جواب دوں گا پہلا آپ ممبر سے نیچے اتر آئیں کیوں آپ سائل کی حیثیت سے آۓ اور جواب چاہتے ہیں ۔۔

روی ممبر سے نیچے اتر آیا ، امام صاحب ممبر پر جا بیٹھے اور سوال دہرانے کو کہا ، رومی نے سوالات کا اعادہ کیا تو امام صاحب نے فرمایا گنتی شمار کر ، روی نے گننا شروع کر دیا ، امام صاحب نے روکا اور فرمایا ایک سے پہلے گنو ہاروی نے کہا ایک سے پہلے گنتی نہیں ہے ۔ تو امام صاحب نے فرمایا خدا سے پہلے بھی کچھ نہیں

دوسرے سوال کے جواب میں امام صاحب نے ایک شمع روشن کی اور فرمایا یہ بتاؤ اس کا رخ کس جانب ہے ؟ رومی نے کہا کسی ایک طرف کا اندازہ لگانا ممکن نہیں ، اس کا رخ سب طرف ہے ۔ امام ابو حنیفہ نے فرمایا خدا سب طرف ہے ۔

تیسرے سوال کے جواب میں امام نے فرمایا : خدا نے تجھے نیچے اتار دیا اور مجھے اوپر ممبر پر چڑھا دیا ، خدا اس وقت یہی کر رہا ہے ۔ رومی یہ سن کر دنگ رہ گیا اور شرمندہ ہو کر واپس چلا گیا ، مجلس میں بیٹھے تمام علماء امام اعظم کی ذہانت دیکھ کر حیران رہ گئے ۔

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *