ایک عورت مردوں سے بے حیائی کی باتیں کیا کرتی تھی اور

حضرت ابو امامہ رضی اللہ تعالی فرماتے ہیں کہ ایک عورت مردوں سے بے حیائی کی باتیں کیا کرتی تھی اور بہت بے باک اور بد کلام تھی ایک مرتبہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے پاس سے گزری حضور صلی اللہ علیہ وسلم ایک اونچی جگہ پر بیٹھے ہوۓ ثرید کھارہے تھے اس پر اس عورت نے کہا

انہیں دیکھو ایسے بیٹھے ہوۓ ہیں ، جیسے غلام بیٹھتا ہے اور ایسے کھارہے ہیں جیسے غلام کھاتا ہے یہ سن کر حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کون سا بندہ مجھ سے زیادہ بندگی اختیار کرنے والا ہو گا پھر اس عورت نے کہا یہ خود کھارہے ہیں اور مجھے نہیں کھلا رہے ہیں

ضور صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا : تو بھی کھالے اس نے کہا مجھے اپنے ہاتھ سے عطافرمائیں حضور صلی اللہ علیہ وسلم اسے دیا تو اس نے کہا جو آپ کے منہ میں ہے اس میں سے دیں حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے اس میں سے دیا ، جسے اس نے کھالیا ( اس کھانے کی برکت سے اس پر شرم و حیاغالب آگئی اور اس کے بعد اس نے اپنے انتقال تک کسی سے بے حیائی کی کوئی بات نہ کی ۔ ( الطبرانی )

Categories

Comments are closed.