اس نے ایک اعلیے نسل کانتا پا لے رکھا تھا

وبرٹ امریکی شہری تھا اس نے ایک اعلیے نسل کانتا پا لے رکھا تھاجو کتا کم اور دوست ذیادہ تھار وبرٹ بھی اس کا خیال گھر کے ایک فرد کی طرح ہی رکھتا تھا اس کے کھانے پینے نہلانے اور ٹلانے میں وہ کسی قسم کی کوتاہی نہیں برتا تھا پھر ایک درج روبرٹ کیے شادی ہو گئی اور سویر ہ اس کی بیوی بن کر اس کے گھر آ گئ روبرٹ کے کتے نے خوش دلی سے سویرہ کو خوش آمدید

کہا اور جلد ہی وہ سویرہ کا بھی دوست بن گیا رو برٹ کے آفس جانے کے بعد وہ سویرہ ہی تھی جو کتے کاہر طرح سے خیال رکھتی تھی ، اب تو کتے کو روبرٹ سے زیادہ سویرہ اچھی لگتی تھی جھی تو وہ ہر وقت اس کے آگے پیچے گھومتا رہتا تھا یوں کہہ لیں کہ کتے کی دوستی اب روبرٹ کے بجاۓ اس کی بیوی سویرہ سے تھی ۔ کچھ مہینوں بعد سویرہ کو معلوم ہوا کہ اس کی

زندگی میں نیا مہمان آنے والا ہے یعنی کو ماں بننے والی تھی اس نے جب یہ بات روبرٹ کو بتائی تو وہ بھی جان کر بہت خوش ہوا کہ اس کے خاندان میں اضافہ ہونے والا ہے کچھ مہینے تو خیریت سے گزر گئے لیکن جو اس بعد ہونے لگا وہ معمول سے ہٹ کر تھا ہوا کچھ یوں کہ ایک دن شام کے وقت سویرہ جب کسی کام میں مصروف تھی تو کچھ دور بیٹا ان کا کتا بڑے غور سے سویرہ کے پیٹ

کے طرف دیکھ رہا تھا اس کا ایسے دیکھنا غیر معمولی تھاکبھی کبھی وہ سویر ہ کے پیٹ کی طرف دیکھ کر غررانے لگ پڑتا تھا اس دن کے بعد کتے نے یہ معمول ہی بنالیا تھا کہ جیسے ہی اس کے نظر سویرہ کے پیٹ پر پڑتی وہ آپے سے باہر ہو جاتا اور بھونکنے لگتا جیسے اس کو پیٹ میں بچہ سخت ناپسند ہو ، سویرہ نے اس بات کا ذکر روبرٹ کے سامنے کیا اور اسے کو ساری بات بتانے کے

بعد کہا کہ مجھے محسوس ہو تا ہے کہ کتا میرے پیٹ میں موجود بچے کو پسند نہیں کرتا اس لیے مجھے خطرہ ہے کہ وہ میرے بچے کو کوئی نقصان نہ پہنچا دے۔روبرٹ بھی سویرہ کی یہ ساری بات سن کر سخت پریشان ہو گیا تھا انہوں نے تو سوچا تھا کہ ہمارا کتا آنے والے بچے کو بھی اپنا دوست بنانے گا لیکن یہاں تو معاملہ ہی کچھ اور ہو گیا تھا ایک دن سویرہ کے پیٹ میں

درد شروع ہو گیا اور اس کے طبیعت خراب ہونے گی روبرٹ اس کو لے کر ہسپتال گیا جہاں پر ٹیسٹ کروائے پر جو بات سامنے آئیے اس نے دونوں کے پائوں تلے سے زمین نکال دی تھی رپورٹ میں پتا چلا کہ سویر ہ کے پیٹ میں بچے کے ساتھ ساتھ ایک بڑے سانپ جتنا کیچوا بھی پرورش پارہا ہے جس کی وجہ سے بچے کی جان کو بہت خطرہ ہے اس وقت سویرہ کا آپریشن کیا گیا اور اس کے

پیٹ سے سانپ کے سائز کا کیچوا نکال دیا گیا جس کے بعد اسے کے ہاں صحت مند بچے کی پیدائش ہوئی اور جلد ہی اس کے کتے نے اس بچے کے ساتھ بھی دوستی کر لی جب روبرٹ اور سویرہ نے یہ بات ایک جانوروں کے ماہر ڈاکٹر کو بتائیے تواس نے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ کتے کو معلوم ہو گیا تھا کہ سویر ہ کے پیٹ میں صرف بچہ نہیں بلکہ ساتھ سانپ بھی موجود ہے اس لیے وہ پیٹ کی طرف دیکھ کر بھو نکا کر تا تھا

Categories

Comments are closed.